اُس کی آنکھوں سے ابتدا کی تھی

Poet: Dr Faisal Shahzad
By: Faisal Shahzad, Islamabad

اُس کی آنکھوں سے ابتدا کی تھی
مُحبت نہ تھی مُحبت کی انتہاکی تھی

یُوں تو رکھا تھامُحبت میں تناسب لیکن
اپنی اوقات سے بڑھ کر ہم نے وفا کی تھی

رسم اُلفت تُو سلیقے سے پھر ادا کی تھی
میری وفاسےتو بڑھ کراس نےجفا کی تھی

زمانے والو کیوں ہم پے اُنگلیاں اُٹھاتے ہو
مُحبت جُرم ہے کیا ہم نے یہ خطا کی تھی

بُجھے چراغ جلا کر بُہت دُعا کی تھی
یوں آندھیوں نے بُہت تیز پھر ہوا کی تھی

نہ تُم نے مانگا ہمیں اپنی دُعاؤں میں مگر
ہم نے تو رب سے فقط تیری التجا کی تھی

اُس کی آنکھوں سے ابتدا کی تھی
مُحبت نہ تھی مُحبت کی انتہاکی تھی

Rate it:
23 Feb, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Faisal Shahzad
Visit 2 Other Poetries by Faisal Shahzad »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City