ازل سے یہی روایت ہے

Poet: Bushra babar
By: Bushra babar, Islamabad

بھروسہ جب توڑا جاتا ہے
تو تذلیل بھی اپنی ہوتی ہے
نئی نہیں ہے یہ کوئ بات
کہ بھروسہ ٹوٹ جاتا ہے
تم بھی توڑ دو تو کیا
ازل سے یہی روایت ہے
بھروسہ توڑا جاتا تھا
بھروسہ توڑا جاتا ہے

کوئ قیامت نہیں آتی
بھروسہ ٹوٹ جانےسے
صرف اک مان ہوتا ہے
اور بس وہ ٹوٹ جاتا ہے
تم بھی توڑ دو تو کیا
ازل سے یہی روایت ہے
بھروسہ توڑا جاتا تھا
بھروسہ توڑا جاتا ہے

کسی کا کچھ نہیں جاتا
نکالا دل سے جاتا ہے
کسی کے دل سے نکل جانا
بڑی ہی بد نصیبی ہے
تم بھی توڑ دو تو کیا
ازل سے یہی روایت ہے
بھروسہ توڑا جاتا تھا
بھروسہ توڑا جاتا ہے

Rate it:
03 Mar, 2019

More Urdu Ghazals Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Bushra babar
Visit 53 Other Poetries by Bushra babar »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Thanks

By: Bushra babar, Islamabad on Mar, 04 2019

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City