اشک بہا کر تجھے بدنام کریں اتنے بھی ہم غافِل نہیں

Poet: نواب رانا ارسلان
By: نواب رانا ارسلان, Ismailabad, Umerkot

اشک بہا کر تجھے بدنام کریں اتنے بھی ہم غافِل نہیں
مانا کے کمزوریاں ہیں پر تیرے معاملے میں ہم کاہِل نہیں

زمانے کے سامنے خوش رہنا تو اک بہانہ ہے
ایسا تو نہیں ہے کہ ہم شکستِ دِل نہیں

محبت میں شکستِ دل تو اک لمبی کہانی ہے
یہ نصیب کی بات ہے تُو میری خوشیوں کا کاتِل نہیں

زندگی میں تو ہمیں اِس بات کا ملال رہا
جو چاہا وہ ملا نہیں، جو ملا اُس کے ہم قابِل نہیں

ہم سے ہمارے حال پہ کوئی سوال نہیں پوچھتا
سوال تو بہت ہیں، لیکن کوئی سائِل نہیں

سنو جانا تم خوش تو ہو نہ رقیب کی بستی میں
سُنا ہے وہاں کسی کو کوئی مسائل نہیں

تیرا نام نہیں لیتا ارسلان مگر ایسا بھی نہیں ہے
تیرا ہجر میرے بیانِ سُخن میں نہ ہو ایسی کوئی محفِل نہیں

Rate it:
07 Mar, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: نواب رانا ارسلان
Visit 28 Other Poetries by نواب رانا ارسلان »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City