پتھروں کے شہر میں نفاست نہیں ملتی

Poet: محمد مسعود میڈوز نوٹنگھم یو کے
By: Mohammed Masood, Nottingham

پتھروں کے شہر میں نفاست نہیں ملتی
کبھی سنگدل لوگوں سے محبت نہیں ملتی

جنہیں تو نہیں ملتا اُنہیں ملتی تیری ہے عبادت
جنہیں ملتا ہے تو اُنہیں تیری عبادت نہیں ملتی

ضروری نہیں تو چاہے جسے وہ بھی تجھے چاہے
زمانے میں کسی سے کسی عادت نہیں ملتی

جنموں سے تیری تلاش کا سلسلہ ہے مسلسل
کسی سے تیری صورت کسی صیرت نہیں ملتی

یوں تو ملتا ہے ہر روز مجھ سے مسکرا کہ وہ ہمیشہ
بس ایک ہم ہی کو اُس کی زرا سی قربت نہیں ملتی

نہ ڈر اِس قدر تو بدایمانیوں سے اے مسعود
یہاں بدنام ہوئے کبھی کسی کو شہرت نہیں ملتی

Rate it:
09 Mar, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Mohammed Masood
محمد مسعود اپنی دکھ سوکھ کی کہانی سنا رہا ہے

.. View More
Visit 363 Other Poetries by Mohammed Masood »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City