شب معراج

Poet: Bushra babar
By: Bushra Babar, Islamabad

کس منہ سے کروں بیاں محمد کی شان کو
نہ وہ لفظ ہیں،نہ وہ زبان ہے

اس قلم میں وہ حرف ہی نہیں
اس سوچ میں وہ گماں ہی نہیں

فقط یہ کہ سر عرش ان کو بلایا گیا
سارے جہانوں کو دیکھایا گیا

جنت بھی ان کو دیکھائی گی
جہنم کا نظارہ کرایا گیا

براق تھی روح برو مقام سدرہ تلک
اس سے آگے راہوں سے وہ آشنا تھے خود

جھکے چاند تارے وہاں ان کے آگے
سلامی کو حاضر تھے فرشتے بھی آگے

جو پردے تھے حاہل وہ ہٹائے گۓ
اور پھر دیدار یار بھی کرایا گیا

فلک پہ بھی وقت تھم گیا ہوگا
جب خدا اپنے محبوب سے ملا ہو گا

پھر آگے کیا ہوا ہو گا
وہی جانیں ،خدا جانے

Rate it:
03 Apr, 2019

More Religious Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Bushra Babar
Visit 55 Other Poetries by Bushra Babar »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City