چاند ہی نکلا نہ بادل ہی چھما چھم برسا

Poet: Zia Jalandhari
By: Faizan, khi

چاند ہی نکلا نہ بادل ہی چھما چھم برسا
رات دل پر غم دل صورت شبنم برسا

جلتی جاتی ہیں جڑیں سوکھتے جاتے ہیں شجر
ہو جو توفیق تو آنسو ہی کوئی دم برسا

میرے ارمان تھے برسات کے بادل کی طرح
غنچے شاکی ہیں کہ یہ ابر بہت کم برسا

پے بہ پے آئے سجل تاروں کے مانند خیال
میری تنہائی پہ شب حسن جھما جھم برسا

کتنے ناپید اجالوں سے کیا ہے آباد
وہ اندھیرا جو مری آنکھوں پہ پیہم برسا

سرد جھونکوں نے کہی سونی رتوں سے کیا بات
کن تمناؤں کا خوں شاخوں سے تھم تھم برسا

قریہ قریہ تھی ضیاؔ حسرت آبادئ دل
قریہ قریہ وہی ویرانی کا عالم برسا

Rate it:
12 Apr, 2019

More Zia Jalandhari Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Owais Mirza
Visit Other Poetries by Owais Mirza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City