ہر دم عذاب سا لگتا ہے

Poet: Affan Sahil
By: Affan Sahil, Lahore

 ہر دم عذاب سا لگتا ہے
یہ عشق عتاب سا لگتا ہے

گر آنکھیں پڑھنے کا ہنر رکھتی ہوں
ہر شخص اک کتاب سا لگتا ہے

کیا لکھوں میں توصیف میں
اس کا چہرہ مہتاب سا لگتا ہے

خود بھی زمانے کے مقلد ہیں
زمانہ ہی مگر خراب سا لگتا ہے

دکھ نہیں ہوتا بچھڑنے کا
وہ ہمیں دستیاب سا لگتا ہے

مجھ اندھے کو اندھیرے میں
دیا بھی آفتاب سا لگتا ہے

کوئی سمجھتا نہیں محبت کو
اپنا خانہ خراب سا لگتا ہے

اک اک دن مجھے یہاں ساحل
اب روزِ حساب سا لگتا ہے

Rate it:
10 May, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Affan Sahil
Visit 5 Other Poetries by Affan Sahil »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City