میں نے چاہا تھا تم کو سدا دیکھنا

Poet: Saima Nawaz
By: Saima Nawaz, Islamabad

میں نے چاہا تھا تم کو سدا دیکھنا
غیر کے ساتھ، تم کو نہ تھا دیکھنا

ساتھ چلتے تو ہو ساتھ میرے نہیں
کیوں ادھوری ہے میری دعا، دیکھنا

غیر کا ہاتھ ہاتھوں میں لیتے ہوئے
مجھ سے کرتے ہو عہد وفا، دیکھنا

دیکھتے ہو مجھے،سوچتے ہو کسے
کس کا پرتو ہے مجھ میں چھپا، دیکھنا

جھوٹے لفظوں پہ تیرے بھروسہ کیا
سادہ لوحی کی یہ انتہا دیکھنا

ہے توجہ کبھی، اور کبھی بے رخی
مجھ کو دیتے ہو کیوں یہ سزا، دیکھنا

تم کو چاہا ہے چاہیں گے ہم عمر بھر
اس جنوں کی ہے اب انتہا دیکھنا

تم نہ چاہو ہمیں کوئی شکوہ نہیں
دل پہ ہے زور کس کا چلا، دیکھنا

اب بھروسہ کرے نہ کسی پہ کوئی
اصل چہرہ ہے سب کا چھپا دیکھنا

Rate it:
20 May, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Saima Nawaz
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City