با ادب با ملاحظہ ہوشیار آجائے

Poet: UA
By: UA, Lahore

با ادب با ملاحظہ ہوشیار آجائے
مصلحت کی توڑ کے دیوار آجائے
آنکھوں کو ہے جِسکا انتظار آجائے
دِل ہوا ہے جِسکا طلبگار آجائے
لبوں پہ ہے جَسکے لئے پکار آجائے
جو لے گیا ہے روح کا قرار آجائے
ہو کے بادل پہ سوار آجائے
آجائے وہ درّ ِ شہوار آجائے
ہو گئے ہیں جِس کے بیمار آجائے
کاش وہ مسیحا اِک بار آ جائے
دیکھ کر جِسے خود پہ پیار آجائے
ہاں وہ ہی پیاری سرکار آجائے
کر کے بیٹھی ہے سنگھار آجائے
دلربا کو لینے دِلدار آجائے
با ادب با ملاحظہ ہوشیار آجائے
مصلحت کی توڑ کے دیوار آجائے

Rate it:
22 Aug, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: uzma ahmad
sb sy pehly insan phr Musalman and then Pakistani
broad minded, friendly, want living just a normal simple happy and calm life.
tmam dunia mein amn
.. View More
Visit 2967 Other Poetries by uzma ahmad »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City