ایک سال میں 50 کلو وزن کم کرنے والی حیرت انگیز خاتون

یو اے ای میں مقیم ایک خاتون نے اپنی فٹنس پر خصوصی توجہ دیتے ہوئے بغیر کسی دوا کے ایک سال میں تقریبا 50 کلوگرام وزن کم کرلیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات میں مقیم زارا صدیق احمد کا کہنا ہے کہ انہوں نے ایک سال کے عرصے میں اپنے وزن میں حیرت انگیز طور پر50 کلو کمی کی ہے،
ان کا مزید کہنا ہے کہ یہ بہت ہی خوفناک ہے، جب آپ کو اپنے خوبصورت، مہنگے کپڑے باہر پھینک دینے پڑیں ۔ کیونکہ آپ ان میں مزید فٹ نہیں رہ سکتے ہیں۔ یہ آسان نہیں ہے جب آپ خود کو شکست دینے والی جھنجھٹ میں پھنس جاتے ہیں، جہاں آپ کو اچھا لگے وہاں آپ کھاتے ہیں، خود کو الگ تھلگ کریں تاکہ کوئی آپ کے وزن میں اضافے کی طرف اشارہ نہ کرسکے اور جب آپ کسی کے سامنے آئے تو آپ کو بڑا اور بدصورت محسوس کیا جاتا ہے ، حقیقت میں یہ بہت برا ہے کہ آپ کو دوبارہ کھانے کی ضرورت ہے۔
۔2015 کو یاد کرتے ہوئے متحدہ عرب امارات میں مقیم بینکر زارا کا کہنا ہے کہ “اس وقت ، میں دوپہر کے کھانے کے لئے کے ایف سی ، چیتوز [ناشتے کے لئے] اور برگر کنگ [کھانے کے لئے] استعمال کیا کرتی تھی ۔” 5 فٹ چار انچ کے قد پر، اس موٹاپے کا منظر بہت ہی نامناسب تھا۔

۔ 2015 میں ، جب میں نے تعلیم حاصل کی تھی ، تو خاندانی حالات ان کے کام کرنے کا باعث بنے تھے۔ بہت سی ورزش بھی کی، دوا کا بھی استعمال کیا۔ لیکن کچھ فرق نہ پڑا۔ ان کا کہنا ہے کہ مجھے اپنے کنبے کی دیکھ بھال کرنا پڑی۔ مالی طور پر ، میں اچھا کام کر رہی تھی۔ “لیکن میں اپنے کنبے کے لئے چیزوں کو ٹھیک کرنے میں اتنا مگن تھی کہ میں [اپنی صحت کے بارے میں] بس بھول گئی تھی ،پھر حالات اس وقت تبدیل ہونا شروع ہوئے جب ان کے دفتر نے اپنے ملازمین کو 2017 میں جم کی پیش کش کی تھی۔

جم کرنے سے وزن دو کلو کم ہو گیا تھا۔ بدقسمتی سے، وہ بتاتی ہیں، “میں ایک مہینے کے لئے گئی تھی۔ میں نے ٹریڈمل پر اپنا گھٹنا تڑوالیا۔ آفس کے اسٹاف کچھ افراد مزاق اڑاتے تھے۔ پھر جم کے ساتھ ساتھ مجھے جم انسٹرکٹر نے کم کھانے کی تلقین بھی کی۔ مجھ سے جب میری خوراک کے بارے پوچھا گیا تو وہ ہکا بکا رہ گئے کہ میں تو زیادہ تر فاسٹ فوڈ کا استعمال کرتی ہوں۔ جم انسٹرکٹر نے مجھے ان تمام اشیاء کو کھانے سے منع کیا ۔ پھر میں نے جم کے ساتھ ان اشیاء کو ترک کردیا۔
جم انسٹرکٹر نے مجھے روزانہ 30 منت واک کرنے کا بھی مشورہ دیا۔ میں روزانہ 30 منٹ تک اپنے گھر کے پاس پارک میں واک کرتی تھی اور میں نے ایک مہینے کے بعد ہی اپنے وزن میں نمایاں کمی پائی۔ ڈایٹ کنٹرول اور مسلسل جم کرنے اور واک کرنے سے میں نے اپنے وزن میں نمایاں کمی دیکھی ۔
میں نے اس دوران اپنی واک کا دورانیہ بڑھا دیا، میں نے 30 منٹ کے بجا ئے 50 منت تک واک کرنا شرع کردیا۔ پھر مجھے سمجھ آیا کہ فا سٹ فوڈ کا استعمال بہت ہی نقصان دہ ہے۔ کچھ عرصے بعد میں نے بہت ہی نمایا ں کمی اپنے وزن میں پائی، اب میں بس اسٹاپ سے روزانہ اپنے گھر واک کر کے جاتی ہوں۔ اور میں نے تہیا کیا ہے کہ مجھے روزانہ صبح 10,000 قدم واک کرنی ہے۔
میں نے تقریباً 50 کلو گرام اپنا وزن کم کر لیا ہے۔ اب مجھے آفس کے لوگ مزاحیہ انداز میں ڈھانچا کہنے لگ گئے۔ جب میں موٹی تھی تو تب بھی میرا مزاق اڑایا جاتا تھا اور اب وزن کم کرنے پربھی، لوگ کسی حال میں خوش نہیں۔ لیکن میں اب بہت ہی اچھا محسوس کرنے لگی ہوں۔

News Source: Bol News

YOU MAY ALSO LIKE :