# 0021

فرقہ بندی ہے کہیں اور کہیں ذاتیں ہیں
کیا زمانے میں پنپنے کی یہی باتیں ہیں


# 0020

عمر بھر کانٹے اٹھائے جن کی راہوں سے
آگ دے کر آشیاں کو وہ ہوا دیتے رہے


# 0019

جب بھی تیری قربت کے امکاں نظر آئے
ہم اتنا خوش ہوئے کہ پریشاں نظر آے


# 0018

پھولوں کے ساتھ اس لیے کانٹے لگے ہیں دوست
پھولوں پے ہاتھ سوچ کے ڈالا کرے کوئی


# 0017

اُمیدیں آرزویں کھیلتی ہیں یوں میرے دل سے
پلٹ جاتی ہیں موجیں جس طراح ٹکرا کے ساحل سے


# 0016

چلے تھے جانب منزل تو کس نے سوچا تھا
وہاں ملیں گے نہ تنکے بھی آشیاں کے لیے


# 0015

جو محبت کرتا ہے ناں، اس کا دِل کسی قبر ، مزار یا درگاہ سے کم نہیں ہوتا اور درگاہ سے پیٹھ کرکے نہیں نکلا جاتا..._ ہمیشہ اُلٹے پاؤں واپس جانا پڑتا ہے اور اُلٹا چلنا بہت " مشکل" اور "آہستہ" ہوتا ہے...!!!


# 0014

تم اکثر پوچھتے تھے نه
جو هم بچھڑ جائیں تو کیا هوگا
تم اکثر سوچتے تھے نه
نا مل پاۓ تو کیا هوگا
لو دیکھ لو,,, اب بھی زنده ھیں
ابھی بھی چاند تکتے ھیں
ابھی بھی پھول کھلتے ھیں
ابھی بھی دل کے دریا میں
هزوروں درد بهتے ھیں
ابھی بھی کچھ نهیں بدلا
مگر_____________کمی سی ھے
تمهارے بعد جاناں
آنکھوں میں نمی سی ھے.......!!!!


# 0013

یوں نہ دیکھو مجھے نشیلے نینوں کا سمندر لے کر ❤

میں جو ڈوبا تو تیرے دل میں اتر جاؤں گا❤


# 0012

‏مثلِ ابر نہیں ہے میری چاہت۔۔

ممکن ہی نہیں جگہ جگہ برسے.


# 0011

اذیت مصیبت ملامت بلائیں
ترے عشق میں ہم نے کیا کیا نہ دیکھا


# 0010

اب مری بات جو مانے تو نہ لے عشق کا نام
تو نے دکھ اے دل ناکام بہت سا پایا


# 0009

💜اس سے مانگا تھا فقط ،،،،،، کچھ وقت میں نے 💛
💖وہ نادان دے گیا ، اک گھڑی مجھکو تحفے میں 💖


# 0008

مجرموں نے ہیں بھیس بدلے یہ کیسا وقت ہے کیا گھڑی ہے
منافقت پھر مفاہمت کا نقاب اوڑھے نکل پڑی ہے


# 0007

جب بھی آرزو کی خود کو پانے کی نہ پا سکا
یہ صرف ہے کہ میں تیرا تھا اور تیرا رہا


# 0006

کیسے کہیں کہ دل لگی دل کو ہی لگ گئی
کہاں سے منکر وفا کو یہ بیماری لگ گئی

وہ جو حسن و جمال کے قائل کبھی نہ تھے
وبال حسن کی انہیں بھی اسیری لگ گئی


# 0005

میں جب بھی اداس ہوتا ہوں وہ مجھ کو ہنسا دیتا ہے
میری جان ہے وہ جو ہر بزم میں مجھ کو دعا دیتا ہے

ہار جاتا ہوں غم دوراں کی تلخیوں سے جب
چپکے سے آکے وہ میرا حوصلہ بڑھا دیتا ہے

اور سبھی دوستوں سے جداہے انداز اس کا
وہ پیار سے مجھے کھری کھری بھی سنا دیتا ہے


# 0004

میرے جزبوں میں سچائی اب بھی ویسی ہی ہے
اسکے بن میری تنہائی اب بھی ویسی ہی ہے
اب کیا احساس دلانا اسکو اپنے درد کا
اسکی لا پرواہی اب بھی ویسی ہی ہے


# 0003

خوش ہو نہیں سکتے ہم رو نہیں سکتے
اشکوں سے داغ فرقت ہم دھو نہیں سکتے
جس دن تمہیں نہ دیکھیں بےچین ہی رہیں
اور رات رات بھر بھی ہم سو نہیں سکتے
تم آؤ یا نہ آؤ ہم تمہارا انتظار کرتے رہیں گے
کیونکہ تمہارے سوا کسی کے ہو نہیں سکتے


# 0002

چہرے پہ میرے زلف کو پھیلاؤ کسی دن
کیا خوب گرجتے ہو برس جاؤ کسی دن

گزرے جو میرے گھر سے تو رک جائیں ستارے
اس طرح میری شب کو چمکاؤ کسی دن


SMS Messages Categories

Poetry SMS – Emotions need word to be expressed, and words are provided in the form of poetry. Proper wordings are essential to express your true feelings. Poetry in English and Urdu is popularly narrated by those who like to express themselves in style. Poetry SMS serves this purpose perfectly well by providing an extensive range of poetic verses for the dedicated users. Poetry SMS in Roman Urdu is widely popular in Pakistan that makes it pretty easy for Urdu language speakers to understand. Poetry SMS can be verses from renowned poets selected and submitted by online users, or from the creative minds of users.

Find 2018 largest collection of Poetry SMS messages at Hamariweb.com submitted by user. This page allows you to express your feeling with the latest Poetry SMS text messages of 2018, Poetry SMS Quotes, Wishes, and Greetings in Urdu, English & Roman Urdu that you can dedicate and sent to your friend & family members in Pakistan now.

Last Updated: 22 Oct, 2019