دو خواتین خلابازوں نے نئی تاریخ رقم کر دی

واشنگٹن — دو امریکی خواتین خلابازوں نے بین الاقوامی خلائی اسٹیشن سے باہر نکل کر خلا میں کام کرتے ہوئے اسٹیشن کے ایک خراب پاور کنٹرولر کو تبدیل کر دیا۔

امریکہ کے خلائی ادارے ناسا نے کہا ہے کہ یہ دنیا کی تاریخ میں صرف خواتین پر مشتمل خلائی چہل قدمی کا پہلا واقعہ ہے۔

ناسا کی خلاباز کرسٹینا کاچ اور جیسیکا میر نے اس مشن کے لیے خلائی اسٹیشن سے باہر نکلنے سے پہلے حفاظتی معیارات کے مطابق اپنے خلائی لباس میں ضروری تبدیلیاں کیں۔

ناسا کے بیان میں کہا گیا ہے کہ پہلے یہ طے کیا گیا تھا کہ تمام خواتین پر مشتمل خلائی چہل قدمی مارچ میں کی جائی گی۔ لیکن، اسے اس وجہ سے منسوخ کرنا پڑا کیونکہ اسپس اسٹیشن میں میڈیم سائز کا صرف ایک ہی ایسا خصوصی لباس موجود تھا جسے کوئی خاتون پہن کر خلا میں جا سکتی تھی۔

کرسٹینا کاچ نے ایک بڑے سائز کے خلائی سوٹ کو چھوٹا کرنے کا بیڑہ اٹھایا اور اس پر کئی مہینے مسلسل کام کر کے ایک ایسا سوٹ تیار کر لیا جسے جیسکا پہن کر اس کے ساتھ خلا میں جا سکتی تھی۔

کرسٹینا اپنے شعبے کے اعتبار سے ایک الیکٹریکل انجنیئر ہیں۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.