دوسرے بیٹے کو پیار کرنے سے دل بھرتا ہی نہیں ہے،شعیب اختر کی اپنےبیٹے کیساتھ شیئرکی گئی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل

راولپنڈی(نیوز ڈیسک) قومی کرکٹ ٹیم کا ماضی میں اہم ترین حصہ رہنے والے فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے اپنے دوسرے بیٹے کے ساتھ اپنی تصویر شیئر کی ہے۔ٹوئٹر پر اپنے بیٹے کے ساتھ تصویر شیئر کرتے ہوئے شعیب اختر نے بتایا کہ اپنے دوسرے بیٹے کو پیار کرنے سے ان کا دل بھرتا ہی نہیں ہے۔ انہوں نے مداحوں سے اپنے بیٹے کیلئے نیک تمناؤں اور دعاؤں کی اپیل بھی کی۔خیال رہے کہ شعیب اختر کے گھر رواں سال جولائی میں دوسرے بیٹے کی پیدائش ہوئی تھی، یہ وہ وقت تھا جب قومی کرکٹ ٹیم ورلڈ کپ 2019 ءسے باہر ہوچکی تھی۔یاد رہے کہ سابق کرکٹ سٹار شعیب اختر نے چپکے چپکے ہری پور کی رباب مشتاق سے تئیس اور چوبیس جون 2014ءکی درمیانی رات شادی کی تھی ۔ہری پور میں اہل حدیث مسجد بوہڑ والی کے مولانا خورشید خان نے نکاح پڑھایا۔نکاح کی تقریب شکر شاہ روڈ پر واقع کنولی ہاؤس میں ہوئی۔اس وقت شعیب اختر کے بھائی نے شادی ہونے کی تردید کی لیکن ہری پور کے نکاح رجسٹرار ایم قاسم نے سب کچھ صاف صاف بتا دیا۔ واضع رہے کہ کچھ عرصہ پہلے شعیب اختر کی رباب سے شادی طے پانے کی خبر سامنے آئی تو رباب کی عمر سترہ سال ہونے پر شعیب اختر کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا جس پر شعیب اختر نے شادی طے پانے کی تردید کر دی تھی۔اب نکاح رجسٹرار ایم قاسم کا کہنا ہے کہ رباب کی عمر سترہ نہیں بلکہ بیس سال ہے۔ شعیب اختر اور رباب کا حق مہر پانچ لاکھ روپے طے پایا جو عندالطلب ہے۔ رباب 23جون1994ءکو صوبہ خیبر پختونخوا کے علاقے ہری پور کے ایک کاروباری اور مذہبی گھرانے میں پید ا ہوئیں اور24جون2014ءکو دنیا کے تیز ترین فاسٹ باؤلر شعیب اختر کے ساتھ شادی کے حسین بندھن میں بندھیں ،شادی کے وقت شعیب اختر 38برس کے تھے جبکہ رباب ان سے تقریبا آدھی عمر کی تھیں تاہم دونوں اس وقت ہنسی خوشی زندگی گزار رہے ہیں اور ان کا ایک بیٹا بھی ہے۔شعیب اختر کی رباب کے والد مشتا ق سے 2013ءمیں حج کے دوران ملاقات ہوئی جہاں شعیب نے ان سے اچھی سی لڑکی ڈھونڈنے کے لیے کہا لیکن یہ قسمت کا ہی کھیل تھا کہ ان کی شادی رباب سے ہوگئی۔

 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.