اسیرِ حُسن

Poet: Syed Ali Abbas Kazmi
By: Syed Ali Abbas Kazmi , Sahiwal

مے نوش صحیح تیرے حُسن کا پیادہ بن کر
خود کو مانا محروم تیرے جلوؤں کا دِیّا ہے

مجنوں تھا تیرا سوچا تجھے عُریاں نہ کروں
دِل کے میخانے میں تُو ہی بس میرا پِیّا ہے

اَسیر ہو کر تیری زُلفوں کی پرچھائی کا
مَن کے مندِر میں بس تُجھے ہی پُوجِیّا ہے

مانِیں ہزار مَنّتیں اور مِنّتیں بھی کر ڈالِیں
حُسنِ یُوسُف کی قَسم رب سے بس تجھ کو لِیّا ہے

رازِ اُلفت ہے یہی کہ تِشنگی کے صحرا میں
تیری زُلفوں کا ہے ریوڑ اور(ساک) گڈریّا ہے

تیرے گِیلے گِیلے گیسُوں ہیں لہروں کا سراب
زُلفیں ہیں تیری یاکہ یہ موجِ دریّا ہے
 

Rate it:
19 Jun, 2020

More Urdu Ghazals Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Syed Ali Abbas Kazmi
Visit 39 Other Poetries by Syed Ali Abbas Kazmi »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City