ایک دوست کے نام

Poet: شفق کاظمی
By: Shafaq kazmi, Karachi

تیری ہر ایک سازش کو برداشت کیا
تیرے ہر ایک تلخ لہجے کو برداشت کیا
تو نے مجھ پر الزامات لگاۓ
میں نے برداشت کیا
تو نے میرے کردار پر باتیں کی میں نے برداشت کیا
یہ تجھے بھی پتہ میرا کوئی قصور نہیں
تیری خاطر دنیا سے بھی لڑی
پر میری برداشت تب ختم ہوئی
جب تو نے اسی دنیا کے سامنے مجھے بدنام کیا
چل دوست تجھے تیری سازیشیں مبارک
راستے کا کانٹا سمجھا تو نے مجھے
پر تجھے سمجھانے کی خاطر حقیقت سے آگاہ ہی تو کیا
چل تیری مسکراہٹ کی خاطر
اب تجھے شفق کہیں نظر نہیں آئے گی
تجھے تیری زندگی تجھے تیرے اصول مبارک
تیرے لئے اب شفق مر گئی

Rate it:
23 Jun, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Shafaq kazmi
میرا نام شفق کاظمی ہے میں کراچی سے ہوں ابھی ایف ایس سی کیا ہے میں حافظ قرآن ہوں۔ میں نے ہماری ویب پر لکھنا شروع کیا جہاں سے میرا ایک نام بنا پہچان ب.. View More
Visit 33 Other Poetries by Shafaq kazmi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City