بڑی عجیب لڑکی ہے

Poet: طارق اقبال حاوی
By: Tariq Iqbal Haavi, Lahore

بڑی عجیب لڑکی ہے
کسی سے کچھ نہیں کہتی
زندگی کی تلخیوں کو
چپ چاپ ہے سہتی
بڑا ہے حوصلہ اس کا
جو اتنے دُکھ چھپاتی ہے
غموں سے چور ہو کر بھی
ہمیشہ مسکراتی ہے
صبر جب حد سے بڑھ جائے
درد جب سر کو چڑھ جائے
تو وائیلن تھام لیتی ہے
اور اکثر ایسا کرتی ہے
بجاتی ہے دُھنیں دِلسوز
اور من کو ہلکا کرتی ہے
نہیں سمجھتی وہ ناداں
درد، درد ہی رہتا ہے
چاہے بدل بھی لو
اندازِ بیاں
میں چاہتا ہوں وہ اپنا سر
اُٹھا کر اپنے وائیلن سے
رکھ دے میرے کاندھے پر
میں چاہتا ہوں کہ وہ لڑکی
اپنے وائیلن کو توڑے
اپنے سارے دُکھ سکھ وہ
میرے ذات سے جوڑے

Rate it:
17 Jul, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Tariq Iqbal Haavi
میں شاعر ہوں ایک عام سا۔۔۔
www.facebook.com/tariq.iqbal.haavi
.. View More
Visit 126 Other Poetries by Tariq Iqbal Haavi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City