تمہاری کہانی تمہاری زبانی

Poet: سید ذوالفقار حیدر
By: Syed Zulfiqar Haider, Gujranwala (Pakistan) , Nizwa (Oman)

تمہاری کہانی تمہاری زُبانی
ہمارے افسانے کوئی نہ جانے

گلے کیے شکوں کی باتیں
کیسے سنے سہے کوئی نہ جانے

بے آبرو کیا جو ضامن تھے آبرو کے
دل کے ان گنت زخم کوئی نہ جانے

مسکراہٹ نہ اب آئے بھول سے بھی
ہونٹ سیے کیوں بیٹھے ہیں کوئی نہ جانے

بے خبر دنیا تماشائی تو ہے
کسی کی ضرورت ہے کہ نہیں کوئی نہ جانے

دیوانہ وار بھٹکا پھر پلٹا وہیں
منزل ہوئی ارمان سی کوئی نہ جانے
 

Rate it:
18 Jan, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Syed Zulfiqar Haider
Visit 50 Other Poetries by Syed Zulfiqar Haider »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City