تم چلے گئے جس راہ پر ھمیں چھوڑ کر منہ موڑ کر

Poet: Sahib
By: Sahib, Multan

تم چلے گئے جس راہ پر ھمیں چھوڑ کر منہ موڑ کر
ھم آج بھی ھیں وھیں کھڑے خود کو توڑکر منہ موڑ کر

تم تو کہتے تھے کبھی نہ جاؤ گے ھمیں چھوڑ کر ھمیں توڑ کر
پھر کیا ھواکیوں چلے گئے ھمں توڑ کر منہ موڑ کر

نہ جانے کتنے طوفان آئے ھمیں توڑنے ھمیں موڑنے
انہیں کیا پتہ ھم کھڑے ھیں خود کو توڑ کر منہ موڑ کر

اک شخص ملا اس راہ پر جو لگا ھمیں تمہارے سا
پر لگا تو دل کو یہ لگا تو آیا ھے خود کو چھوڑ کر

یہی اب ھماری قسمت ھے یہ سوچ کر
ھم نے خود کو گنوا دیا تمہیں کھو کر تمہیں چھوڑ کر

Rate it:
22 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Sahib
Visit 13 Other Poetries by Sahib »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City