تو کیا جانے!

Poet: رعنا کنول
By: Raana Kanwal, Islamabad

تو کیا جانے تیرے بن رہ نہ پا ئیں گے
تو کیا جانے تیرے بن جی نہ پا ئیں گے
تو کیا جانے تیرے بن مر جائیں گے
تو کیا جانے تیرے بن بکھر جائیں گے
تو کیا جانے تیرے بن ٹوٹ جائیں گے
تو کیا جانے تیرے بن اجر جائیں گے
تو کیا جانے تیرے بن جان نکل جائے گی
تو کیا جانے تیرے بن سانسیں روک جائیں گی
تو کیا جانے تیرے بن یہ دل ٹوٹ جائے گا
تو کیا جانے تیرے بن اکھیاں رو رو ہارے
تو کیا جانے تیرے بن جینا ایک بد دعا ہے
تو کیا جانے تیرے بن یہ زندگی سزا ہے
تو کیا جانے تیرے بن کنول برا حال ہے
تو کیا جانے تیرے بن رہ نہ پا ئیں گے
 

Rate it:
17 Jul, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Raana Kanwal
Visit 24 Other Poetries by Raana Kanwal »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City