حسن کے پجاری

Poet: امن وسیم
By: امن وسیم, ملتان

یہ بیوپار جو حسن کے ہیں پجاری
مصنوعی جن کی ہے سب آہ و زاری

یہ ظالم سفاک سنگدل ہوتے ہیں
یہ خاکی تو ہیں پر فطرت میں ناری

محبت کا مطلب یہ کب جانتے ہیں
محبت کے احساس سے ہیں یہ عاری

دوشیزہ حسیں جب کوئی دیکھ لیں یہ
تو ان کے دلوں میں بڑھے بے قراری

مسلتے ہیں فطرت کے رنگوں کو ایسے
کہ فریاد کرتی ہے بے بس بے چاری

ظاہر بھی ظالم ہے باطن بھی ظالم
یہ تلوار ایسی جو کہ ہو دو دھاری

تعلق کوئی بھی نہ ان سے رکھو تم
دشمنی بھی بری اور بری ان کی یاری

جو کچھ چاہا ان کو وہی مل گیا ہے
انہوں نے تو کوئی بھی بازی نہ ہاری

سنا ہے کہ منصف ہے وہ عرش والا
نجانے کب آئے گی ان کی بھی باری

امن تم خدا سے نہ مایوس ہونا
دیکھنا ان کا انجام آخر ہے خواری

Rate it:
21 Mar, 2013

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Aman Waseem Arbi
Visit 43 Other Poetries by Aman Waseem Arbi »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Aman Waseem,
Itney Umda alfaaz ki Takhleeq k Liey bohat saari daad qabool ferma'iye.

Haqeeqat hai k Hamari is duniya me ager Perwaney hotey hain tu Bhanw'rey bhi hotey hain.
Yaqeenan Khaliq-e Ka'enaat ne un Bhanw'ra Sift Logo'n k Liye B'd Tareen Saza rakhi hai mager kya hi Acha ho k hum un Logo'n k Haq me Sudher janey aur Tauba ker Lainey ki Dua kare'n k ager Hamari ye Dua Qabool ho gaee tu Allah ki Makhlooq Jahannam k Azab se Mehfooz ho ja'ey gi aur ager esey Log Tauba se mehroom rahey tu un k liye dard naak azab tu hai hi.

By: Sarwar Farhan Sarwar, Karachi on Mar, 23 2013

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City