سچ کہا اس نے مگر اس کا بیان اچھّا لگا

Poet: UA
By: UA, Lahore

ہم سخن اچھّا لگا وہ ہم زبان اچھّا لگا
سچّ کہا اس نے مگر اسکا بیان اچھاّا لگا

بےنیازی میں بھی تھی ہم پر نظر جناب کی
بے دھیانی میں جو ہم پر تھا دھیان اچھّا لگا

بوئے خام خاک سے مہکا ہوا آنگن تیرا
اور آنگن کے گِرد وہ کچّا مکان اچھّا لگا

صبح صبح نور کی چادر لپیٹے دور تک
آسمانی رنگ کشادہ آسمان اچھّا لگا

سر جھکا کر بیٹھنا اسکا ہمارے درمیاں
مثلِ مہماں ایک انوکھا میزبان اچھّا لگا

Rate it:
24 Sep, 2019

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: uzma ahmad
sb sy pehly insan phr Musalman and then Pakistani
broad minded, friendly, want living just a normal simple happy and calm life.
tmam dunia mein amn
.. View More
Visit 3012 Other Poetries by uzma ahmad »

Reviews & Comments

ماشا اللہ بہت خوبصورت غزل کہی ہے ۔شاعرانہ خیالات بھی خوب ہیں مگر اِس غزل میں دو ایک شعروں میں کچھ وزن کی کمی محسوس کی اور میں نے چاہا کہ آپ کی اِس شاندار کاوش سے اِس خرابی کو دور کر دیا جائے تو یہ اور بھی خوبصورت ہو سکتی ہے سو اصلاح کے بعد یہ غزل ایسےلکھی جائے گی،امید ہے میری اِس گستاخی کو معاف فرما دیں گی۔
جزاک اللہ خیر بہت شکریہ کی آپ نے بہت خوبصورت اور ادبی انداز میں کوتاہی کی ناصرف نشاندہی کی بلکہ موزوں اصلاح بھی فرمائی جس کے لئے آپ کا معافی چاہنا نہیں بلکہ میرا آپ کو شکریہ کہنا بنتا ہے ایسے ہی اپنی قیمتی آرا و اصلاح سے کلام کی خامیوں سے آگاہ کیجئے گا
شکریہ ہمیشہ شاد و آباد رہیں

By: Uzma, Lahore on Oct, 14 2019

Thanks for your precious admire Respected Hassan Kayani Sb.
glade to see you here again after a long time
be happy and stay blessed always

By: Uzma, Lahore on Oct, 14 2019

Bahoot Khoob. Get blessed.

Kind regards,
Hassan

By: Hassan Kayani, Leeds on Oct, 03 2019

buhat khob janab

By: asad, mpk on Sep, 29 2019

ماشا اللہ بہت خوبصورت غزل کہی ہے ۔شاعرانہ خیالات بھی خوب ہیں مگر اِس غزل میں دو ایک شعروں میں کچھ وزن کی کمی محسوس کی اور میں نے چاہا کہ آپ کی اِس شاندار کاوش سے اِس خرابی کو دور کر دیا جائے تو یہ اور بھی خوبصورت ہو سکتی ہے سو اصلاح کے بعد یہ غزل ایسےلکھی جائے گی،امید ہے میری اِس گستاخی کو معاف فرما دیں گی۔
ہم سخن اچھّا لگا وہ ہم زبان اچھّا لگا
سچ کہا اس نے مگر اسکا بیان اچھالگا
بےنیازی میں بھی تھی ہم پر نظر جو آ پ کی
بے دھیانی میں جو ہم پر تھا دھیان اچھّا لگا
بوئے خاکِ یار سے مہکا ہوا آنگن ترا
اور اُس کے گِرد وہ کچّا مکان اچھّا لگا
صبح نو وہ نور کی چادر تھی پھیلی دور تک
اور اُس پر یہ کشادہ آسمان اچھّا لگا
سر جھکا کر بیٹھنا اسکا ہمارے درمیاں
مثلِ مہماں ایک انوکھا میزبان اچھّا لگا
جہاں رہیں خوش رہیں،
آپ کا مخلص،
وسیم

By: Wasim Ahmad Moghal, Lahore on Sep, 26 2019

بے دھیانی میں جو تھا ہم پر دھیان اچھّا لگا

By: Uzma, Lahore on Sep, 26 2019

مثلِ مہماں وہ انوکھا میزبان اچھّا لگا

By: Uzma, Lahore on Sep, 25 2019

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City