سکوت مرگ ہے ظاری تمام پھولوں پر

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

جفا کا ذکر کریں تو سزا نہیں دیں گے
ہیں دل شکستہ سبھی ہم رجا نہیں دیں گے

سکوت مرگ ہے ظاری تمام پھولوں پر
بلا کے حبس میں مہکی ہوا نہیں دیں گے

جنوں میں چاک گریباں تو مست و بے خود ہیں
جو حق پہ چاک ہوئی اس قبا نہیں دیں گے

سکون دل کے لیے بے اثر تھی ہر کاوش
امیر شہر یہ تیری کہیں خطا نہیں دیں گے

مرے خیالوں میں پھر جلترنگ بجتی ہے
وہ آدھی رات کو جب بھی صدا نہیں دیں گے

جہاں برسنا ہے اس نے وہیں پہ برسے گی
لبوں کی پیاس بجھانے گھٹا نہیں دیں گے

ہر ایک ملک میں جنگ و جدل کی باتیں ہیں
فنا کے دور میں وشمہ بقا نہیں دیں گے

Rate it:
22 Sep, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4528 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City