عرش پر

Poet: محمدصدیق پرہار
By: Muhammad Siddique Prihar, Layyah

بہت ہی خوب منظرہے شب اسریٰ عرش پر
پہنچے ہیں رب کی دعوت پرمصطفی عرش پر

دونوں ہوئے قریب کتنے محب جانتاہے محبوب بھی
فرمایا رب نے قاب قوسین اوادنیٰ عرش پر

چوم کرتلوے سرکارکے روح الامین نے کہا
رب نے ہے آج آپ کوبلایاعرش پر

رہ گئے راستے میں ہی سبھی ساتھ جانے والے
جارہے ہیں سرکاردوجہاں تنہاعرش پر

اعزازوعظمت حاصل ہے یہ فقط پیارے نبی کو
جائے گاکوئی اورنہ ہی ہے گیاعرش پر

لے آتے ہیں دوست تحفہ کوئی دوست کے پاس
کیالائے ہوخالق کائنات نے پوچھاعرش پر

سروردوجہاں نے دیاادب سے یہ جواب
نہیں تیرے پاس وہ چیزہوں لایاعرش پر

صوم وصلوٰۃ میں کمی کراناہی مقصودنہ تھا
شوق دیدارمیں بھیجتے رہے حضرت موسیٰ عرش پر

مانگ لوجوبھی مانگناہے مجھ سے پیارے
رب کریم نے محبوب سے اپنے فرمایاعرش پر

بخشش امت ہی مانگ لی شفیع روزشمارنے
اللہ سے مانگنے کاجب لمحہ آیاعرش پر

بخش دوں گامحبوب امت تیری محشرکے دن
اللہ نے محبوب سے صدیق ؔ وعدہ کیاعرش پر

Rate it:
25 Mar, 2019

More Religious Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muhammad Siddique Prihar
Visit 116 Other Poetries by Muhammad Siddique Prihar »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City