فقط کہنے کو میری عاشقی معلوم ہوتی ہے

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

فقط کہنے کو میری عاشقی معلوم ہوتی ہے
کوئی تم سے بڑی دیوانگی معلوم ہوتی ہے

جہاں مایوسیاں بڑھ جائیں اک لمبے سفر کے بعد
تو اس کو چھوڑ کر آگے خوشی معلوم ہوتی ہے

یہ جانا رنج سے خوگر کا بھی مٹتا نہیں ہے رنج
بڑھے اور مار نہ ڈالے سادگی معلوم ہوتی ہے

مرے باطن سے واقف ہو نہ پایا راز داں میرا
جو دل کے بھید کی یہ بندگی معلوم ہوتی ہے

میں سمجھاتی ہوں اس کو اب ذرا سے سخت لحجے میں
دلیلوں سے سمجھتا دل لگی معلوم ہوتی ہے

جو اپنے ہی عدو ہوں غیر سے پھر کیسی امیدیں
اگر بن جائے خود طوفاں نمی معلوم ہوتی ہے

کیفیت جذب و مستی کی جو مجھ پی چھا گئی وشمہ
تصوف کے مضامیں میں کمی معلوم ہوتی ہے

Rate it:
23 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4528 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City