قرض تیری جفا کا ادا کیسے کروں

Poet: محمد مسعود نوٹنگھم یو کے
By: Mohammed Masood, Nottingham

قرض تیری جفا کا ادا کیسے کروں
تو ہی بتا تجھ سے میں وفا کیسے کروں

جب اپنوں نے ہی لوُٹا ہے بھر کر مجھ کو
میں غیروں سے بھلا گلہ شکواہ کیسے کروں

تُجھ پہ نثار کیا تھا جسم و جاں کبھی
اب تیری بربادی کی میں دُعا کیسے کروں

کہتے ہیں سب تجھے بھولنا بھلانا ہے مناسب ہو گا
اپنے ہی سینے سے دل کو جُدا کیسے کروں

اکیلے چلنے کی عادت نا رہی مسعود کو اب
سفر زندگی کا تھا تیرے بنا کیسے کروں

Rate it:
16 Mar, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Mohammed Masood
محمد مسعود اپنی دکھ سوکھ کی کہانی سنا رہا ہے

.. View More
Visit 363 Other Poetries by Mohammed Masood »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City