چار دیواریں بنا کر کیا سوچتے ہو

Poet: وقاص احمد وکی
By: Waqas Ahmad Wicky, Bahawalpur

چار دیواریں بنا کر کیا سوچتے ہو
یہ مکاں ابھی بھی مکاں تو نہیں ہے

جو تمھارا شب و روز آنا جانا ہے وقاؔص
یہ دِل ہے میرا ، کُل جہاں تو نہیں ہے

دیکھ کر میری قبر کیا پھر سے شرماؤ گے؟
اور کہو گے کہ وقاؔص یہاں تو نہیں ہے؟

لرزتے ہاتھوں سے لکھ کے نام کسی کے ورق پہ کہنا
یہ نام ہے میرا ، محبت کا بیاں تو نہیں ہے

کاش کہ وہ کہہ دے چھوڑ دنیا کو وقاؔص تُو بھی
تُو دل میں ہے میرے ، کہیں عیاں تو نہیں ہے

Rate it:
17 Jul, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Waqas Ahmad Wicky
Visit 2 Other Poetries by Waqas Ahmad Wicky »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City