کرونا وائرس

Poet: طوبیٰ امجد
By: ارسلان احمد, Ismailabad

کرونا کو تم ختم کرو نا
تھوڑی سی احتیاط کرو نا

خدا کے آگے التجا کرو نا
خدا یہ وائرس ختم کرو نا

بچاؤ خود کو اس وبا سے
کرو علاج تم دعا سے

ختم کرنا ہو جو کرونا
دن میں ہاتھ تم بار بار دھونا

خدا کے آگے بار بار تم رونا
پھر نہیں چھوئےگا تمہیں کرونا

ترقیوں کو جو جا لگے تھے
زمین بوس ہیں وہ سارے

اے پیارے سمجھ اشارے
کیا کہنا چاہتا ہے خداراہ

کچھ وقت اس کی یاد میں صرف کرو نا
تم خدا کے آگے دعا کرو نا

کرونا یہ سب کیا کررہا ہے
انسان سے انسان مر رہا ہے

بخشش کا تم سامان کرو نا
یا اللہ ہم کو معاف کرو نا

اپنی رحمت سے تم ڈھانپ لو نا
کرونا کو تم ختم کرو نا

وہ پیار کرتا ہے تم سے ممتا جیسا
تم بھی اس سے پیار کرو نا

شرک کو چھوڑو بدعت کو چھوڑو
اے ایمان والو اس کو ایک کہو نا

نہ تم بناؤ اس کے شریک
کیونکہ وہ تو ہے واحدہ لاشریک

یہ پیر منگتے فقیر چھوڑو
کبھی تو اسکی عبادت کرو نا

ہے اسکا فیض ہر سو
اسکے فیض کو طلب کرو نا

یا حفیظ و یا عزیز و یا رفیق کا
تم ہر وقت ورد کرو نا

ہے آیا عذاب کیونکر یہ تم پر
یہ سوچ کر تم توبہ کرو نا

زمین کو چیرا آسمان کو چوما
اب ہوا کیا ہے تم کو اس کا کچھ کا علاج کرونا

سب ہربےتم نے آزما لئے ہیں
اب میری مانو تو تم توبہ کرو نا

Rate it:
01 Apr, 2020

More Forgiveness Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: ارسلان احمد
Visit 30 Other Poetries by ارسلان احمد »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City