کہانی

Poet: Asad
By: Asad, mpk

 پھر اس سے آگے کی کہانی سن
غیر کی چھوڑ اپنی ترجمانی سن

اس رات جب تو ھمین چھوڑ گیا تھا
تنھا کر کے اکیلا منہ موڑ گیا تھا

مشکل سے کٹی تھی وہ رات تیرے بغیر
نہ چاند پورنم اچھا لگا نہ صبح صادق سویر

ان چاھے سے خیال کئی آنے لگے تھے
نفرت کے تیر تہین اندر چلانے لگے تھے

خاموشی نے بھی ماحول کچھ بگاڑ رکھا تھا
اور غمون نے یے لمحہ مانو تاڑ رکھا تھا

امڈ آئے تھے بادل غم ہجران میرے حضور
ہونے لگی تھی رم جھم برسات میرے حضور

بس یہی وہ قصہ تھا جو عام ھو گیا
جسکے کارن سبب تو اسد بدنام ھو گیا

Rate it:
16 Nov, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Asad
Visit Other Poetries by Asad »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City