ہر جا تو ہی تو ہوتا

Poet: Zeeshan Lashari
By: Zeeshan Lashari, Kunri

یہ موسم اور حسیں ہوتا جو میرے پاس تو ہوتا
نہ گل کو دیکھتا کوئی اگر تو روبرو ہوتا

ہمارا دل یہ کہتا ہے کہ موسم آج پیارا ہے
یہ کہتا ہے ہمیشہ ہی ہے جب بھی ساتھ تو ہوتا

یہ کیسا عشق تھا اپنا کسی کو کچھ خبر نہ تھی
مزہ تو تب ہی تھا سجنا کہ چرچا کوبکو ہوتا

مرا محبوب پیارا ہے نہیں اس سا کوئی پیارا
یہ چندا سر نگوں ہوتا جو اس کے روبرو ہوتا

ہے لیتا اوٹ بادل کی یہ چندا دیکھ کر اس کو
یہ شرما کے نہ یوں چھپتا جو اس سا خوبرو ہوتا

وہ گل بھی سوچتا ہوگا کہ کھلتا ہے جو ٹہنی پر
جو سجتا زلف تیری پر تو وہ بھی سرخرو ہوتا

تجھے خود بھی نہیں معلوم کہ کتنا چاہتا ہے شانؔ
اس کی بس یہ خواہش ہے کہ ہر جا تو ہی تو ہوتا

Rate it:
17 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Zeeshan Lashari
Visit 16 Other Poetries by Zeeshan Lashari »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City