ہنساتا ہے مجھے پھر وہ ہنسا کر جب رلاتا ہے

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

ہنساتا ہے مجھے پھر وہ ہنسا کر جب رلاتا ہے
ہزاروں پھول پھر خود ہی کہیں سے توڑ لاتا ہے

مجھے بانہوں میں بھر کر زندگی کے نام پر شاہد
سرورِ عشق کی آتش میں جسم و جاں جلاتا ہے

مرا ساتھی مرا دلبر مرے ہر خواب کا محور
شعورِ آگہی دے کر حسیں غزلیں لکھاتا ہے

مرے ارماں مری چاہت تخیل ہی تو ہے جاناں
یہ زندانِ حیاتی میں مجھے مجھ سے ملاتا ہے

دلِ وشمہ کی دھڑکن سے بنا کر اک حسیں گجرا
مرے بالوں میں چاہت سے مرا جانم سجاتا ہے

Rate it:
20 Jan, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4524 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City