یہ کیسا عشق ہوا

Poet: اسماء طارق
By: Asma Tariq, Gujrat

 دیکھ ذرا تیرے عشق کی انتہا یہ کیسے چاہتے ہیں
سڑکوں پر ٹائر جلاتے ہیں اور اذیت دیتے ہیں

زبان سے تیرے نام کے نعرے لگاتے ہیں
اور ہاتھ سے تیرے ہی لوگوں پر ڈنڈے اٹھاتےہیں

خود کو تیرے پیغمبر کا عاشق کہتے ہیں
مگر مانتے انکی ایک نہیں ہیں،یہ کیسا عشق ہوا

جو لڑتے رہے ساری عمر انسانیت کےلیے
آج انہی کے نام کے سہارے روندا جارہا انسانیت کو

جن کا دین ایمان تھا صرف اور صرف انسانیت
انہی کے ماننے والے مانتے نہیں بات ان کی

 

Rate it:
03 Nov, 2018

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Asma Tariq
Visit 3 Other Poetries by Asma Tariq »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City