آنکھوں سے دریا

Poet: ارشد ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi (Arshi), Karachi

اب جو بچھڑا تو خود کو سزا دوں گا میں
اپنی آنکھوں سے دریا بہا دوں گا میں

اب جو ٹوٹا کوئی خواب میرا اگر
اپنی آنکھوں کو ایسی سزا دوں گا میں

ایک ہی تو ملا ہے مجھے دوست یاں
اب کیا اس کو بھی گنوا دوں گا میں

میرے دل میں کہیں پر دھڑکتا تو ہے
آ کسی روز تجھ کو سنا دوں گا میں

اب بھی آیا نہ میرے بلانے سے تو
یاد رکھنا کے تجھ کو بھلا دوں گا میں

چھوڑ اس بات کو تو نے کیا کیا تھا آ
اپنے سینے سے تجھ کو لگا لوں گا میں

گر دیا دھوکہ مجھ کو تو سن لے تو بھی
راز تیرے ہیں جتنے بتا دوں گا میں
 

Rate it:
22 Sep, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muhammad Arshad Qureshi
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
Visit 195 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City