پاکستان
Poet: سُہیل احمد
By: Suhail Ahmad, Rawalpindi

جگر کو چھلنی کرے ، روح سوگوار کرے
وطن کا دُکھ مِری آنکھوں کو اشکبار کرے

کوئی تو ہو جو عداوت کے دُکھ سمجھ پائے
دِلوں کو وصفِ محبت سے ہمکنار کرے

کھلیں وہ گل کہ مہکنے لگے چمن مالک
ہوا کچھ ایسی چلے دُور یہ غُبار کرے

ہر ایک شخص کے ہاتھوں میں ہوں گلاب کے پھول
زباں پہ ذکرِ وفا ہو سبھی سے پیار کرے

مِلے وہ قوم کو رہبر کہ جو کرے خدمت
کبھی پڑے جو ضرورت تو جاں نثار کرے

سُہیل ہم سے تقاضہ یہ سرزمین کا ہے
کبھی نہ راہ ِستم کوئی اختیار کرے

Rate it: Views: 20 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 28 Apr, 2018
About the Author: Suhail Ahmad

Visit 13 Other Poetries by Suhail Ahmad »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.