بڑےبڑے لوگوں سے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
Poet: m.asghar mirpuri
By: m.asghar mirpuri, birminghaham

بڑے بڑے لوگوں سے یاروں کی شناسائیاں بہت ہیں
اسی لیے میرے خلاف ہوتی محاذ آرائیاں بہت ہیں

خدا کے لیے تم لوگ مجھ پہ تہمتیں نہ لگاؤ
اس کام کے لیے میری ہمسائیاں بہت ہیں

میرے رقیبوں کو بھلا حسد کیوں نہ ہو
ریڈیو پر ہم نے دھومیں مچائیاں بہت ہیں

محبت کی دنیا میں سنبھل کر قدم رکھنا
سنا ہے ان راہوں میں کھڈے کھائیاں بہت ہیں

کم لباس میں جب نظر آتی ہیں کئی بیبیاں
لگتا ہے کہ اب کپڑے کی مہنگائیاں بہت ہیں

ہم نے تو کئی محفلوں کو رونقیں بخشیں اصغر
مگر اپنے مقدر میں تنہائیاں بہت ہیں

Rate it: Views: 0 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 06 Nov, 2018
About the Author: m.asghar mirpuri

Visit 7369 Other Poetries by m.asghar mirpuri »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.