اشک
Poet: م الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi (Arshi), Karachi

اشکوں سے مجھے آنکھ بھگونے نہیں دیتا
یہ دل تو کوئی کام بھی ہونے نہیں دیتا

ڈھارس بھی مجھے دیتا ہے سینے سے لگا کر
روتا ہے وہ خود پر مجھے رونے نہیں دیتا

اوروں کی طرح یہ بھی نہ دامن کو چھڑا لے
یہ خوف مجھے راتوں کو سونے نہیں دیتا

ہو جائیں کبھی پورے محبت کے خسارے
وہ خود کو مرے دل میں سمونے نہیں دیتا

ہر بار مجھے ڈھونڈ کے لاتا ہے کہیں سے
ملتا بھی نہیں اور مجھے کھونے نہیں دیتا

کب تک رہوں خاموش میں فرقت میں اب اس کی
لفظوں کی وہ مالا کو پرونے نہیں دیتا

لگتا ہے کہ آئے گا وہ اک روز پلٹ کر
یہ اک گماں کسی کا بھی ہونے نہیں دیتا
 

Rate it: Views: 10 Post Comments
 PREV More Poetry NEXT 
 More General Poetry View all
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 07 Jan, 2019
About the Author: Muhammad Arshad Qureshi

My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More

Visit 155 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.