عشق

Poet: م الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi (Arshi), Karachi

ستارہ میری قسمت کا اگر چہ ٹمٹماتا ہے
تو پھر وہ دور سے ہی کیوں مجھے جلوہ دکھاتا ہے

نئے اس شہر میں تو نے بھی اپناپن بدل ڈالا
ہمیں تُو غیر کہتا غیر کو اپنا بتاتا ہے

سنا ہے کل تلک جو شخص لوگوں کو ہنساتا تھا
کسی کی یاد میں اکثر وہ اب آنسو بہاتا ہے

جہاں ملنے کا کہتا ہے کبھی ملتا نہیں مجھ کو
ہمیشہ ہی مجھے وہ کیوں غلط رستہ بتاتا ہے

محبت ہو گئی جن کو وہ یہ بھی جانتے ہیں کے
ہوا اچھی ہو موسم کی تو دل بھی گنگناتا ہے

سرِ محفل تو ہم کو بھی سمجھ آتی تھی مجبوری
اکیلے بھی اگر ہم ہوں تو وہ نظریں چراتا ہے

سراسر جھوٹ ہے یہ کے اسے ہم نے ہی چھوڑا تھا
یہاں ہر شخص ہی ہم پر یہ کیوں تہمت لگاتا ہے
 

Rate it:
22 Jan, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muhammad Arshad Qureshi
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
Visit 167 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »

Reviews & Comments

Reading the above love poetry on this page and can't help to write my review because the sharing is full of love with feelings and the expressions by the poet.

By: yawar, khi on Jan, 28 2019

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City