گنگناتے ہوئے جذبات کی آہٹ پا کر
Poet: Wasi Shah
By: yasir, hyderabad

گنگناتے ہوئے جذبات کی آہٹ پا کر
رُوح میں جاگنے والی ہے کوئی سرگوشی

آکسی خوف میں اُتریں کسی غم کو اوڑھیں
کسی اُجڑے ہوئے لمحے میں سجائیں خود کو

تھام کر ریشمی ہاتھوں میں ہوا کی چادر
رُوح میں گھول لیں تاروں کا حسیں تاج محل

جی میں آتا ہے لپٹ جائیں کسی چاند کے ساتھ
بے یقینی کے سمندر کا کنارہ لے کر

ہم نکل جائیں کسی خدشے کی انگلی تھامے
تیری یادوں کے تلے درد کے سائے سائے

گنگناتے ہوئے جذبات کی آہٹ پا کر
رُوح میں جاگنے والی ہے کوئی سرگوشی
 

Rate it: Views: 23 Post Comments
 PREV More Poetry NEXT 
 More Wasi Shah Poetry View all
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 04 Feb, 2019
About the Author: Owais Mirza

Visit Other Poetries by Owais Mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
In no genre of Urdu is the sweetness of the language as prominent as in its
poetry.
By: Iqbal, Karachi on Feb, 06 2019
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.