یہ وسعتِ نظر کا کمال تھا
Poet: Shaikh Khalid Zahid
By: Shaikh Khalid Zahid, Karachi

یہ وسعتِ نظر کا کمال تھا
ہر طرف تو اور تیرا خیال تھا

بد گمانو کو بھی خوش گمان تھا
یہ بھی کرشمہ حسن و جمال تھا

گزار تو لیا ہے تیرے بغیر بھی
وہ وقت بھی گویہ وبال تھا

وہ جو ہمنوا تھے کیوں تنہا کر گئے
سفر کی صعوبتوں کا یہ سوال تھا

دل میں گھر کر جائے شائد، خالد
ابھی لفظوں میں روح کا احتمال تھا

Rate it: Views: 8 Post Comments
 PREV More Poetry NEXT 
 More Love / Romantic Poetry View all
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 07 Feb, 2019
About the Author: Sh. Khalid Zahid

Take good care of others who live near you specially... View More

Visit 45 Other Poetries by Sh. Khalid Zahid »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.