غم کے سائے بڑھے آتے ہیں

Poet: محمد مسعود نوٹنگھم یو کے
By: Mohammed Masood, Nottingham

‎غم کے سائے بڑھے آتے ہیں کسی قاتل کی طرح
‎درد میں ڈوبا ہوں میں کسی ساحل کی طرح

کوئی بھی ایسا نہیں جس کہہ سکیں حال دل ہم
آج اپنے ہی دور دیکھتے ہیں کسی منزل کی طرح

میرے مقدر میں بے بسی کے سوا کچھ بھی نہیں
ہاتھ کی لکیریں پڑھتا ہوں کسی زائل کی طرح

اندھیرے مجھ کو کیا دیں گے راہ زندگی میں
میرے دل کا ہر داغ روشن ہے کسی محفل کی طرح

غم کے ساگر میں کچھ یوں ہم ڈوبے ہیں مسعود
خوشی کی قطرے سے بھی خوف کھاتے ہیں بزدل کی طرح

 

Rate it:
Views: 9

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

Email
14 Mar, 2019
About the Author: Mohammed Masood
محمد مسعود اپنی دکھ سوکھ کی کہانی سنا رہا ہے

.. View More
Visit 359 Other Poetries by Mohammed Masood »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City