جواب رانگ نمبر
Poet: Shazia Hafeez
By: Muhammad Hafeez Javed, Riyadh, KSA

اک دن آیا رانگ نمبر، کر لی میں نے بات
آواز میں تھا کچھ ایسا جادو، دل ہو گیا شاد

باتیں اسکی تھیں بہت ہی پیاری پیاری
مر مٹی میں اس پہ، ساری کی ساری

اسکی باتوں میں اکثر کھو جانے لگی
اپنے خیالوں میں اسکو بسانے لگی

اک گمنام سا چہرہ دل کو لبھانے لگا
میرے سپنوں کو وہ رنگیں بنانے لگا

دل و جان سے میں اسکو چاہنے لگی
اسکے سپنوں میں بھی چھانے لگی

بات ہی بات میں بات کچھ ایسی ہو گئی
وہ میرا ہو گیا، میں بھی اسکی ہو گئی

Rate it: Views: 1463 Post Comments
 PREV More Poetry NEXT 
 More Love / Romantic Poetry View all
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 27 Mar, 2009
About the Author: Muhammad Hafeez Javed

Visit 388 Other Poetries by Muhammad Hafeez Javed »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Nice and so cute
By: Sofia Manzoor, Faisalabad on Dec, 23 2013
Reply Reply to this Comment
bri by wazn thi apki ye poetrey,.......
By: aliyan, lahore on Oct, 24 2012
Reply Reply to this Comment
Its realy nice poem.
By: Saif Ashir, Islamabad on Jul, 13 2011
Reply Reply to this Comment
آپ کی نظم بہت اچھی ہے
دل کو بہت پسند آئی واہ جی واہ
By: Abida Noor, Lahore on Jul, 12 2011
Reply Reply to this Comment
So Nice and so surprising
By: Zaid, Karachi on Jul, 08 2011
Reply Reply to this Comment
Very Good
By: Falak Naz, Hyderabad on Jul, 08 2011
Reply Reply to this Comment
صوفیہ منظور صاحبہ، شکریہ اظہار دلچسپی کا، آپ کے سوال کا جواب ہاں میں ہے
By: Shazia Hafeez, Attock on Mar, 31 2009
Reply Reply to this Comment
یہ آپ دونوں کی اپنی کہانی ہے کیا کیوں کہ رانگ نمبر حفیظ جاوید کے نام سے ہے اور جواب رنگ نمبر شازیہ حفیظ کے نام سے بتائیے گا ضرور پلیز
By: Sofia Manzor, Lahore on Mar, 30 2009
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.