اٹکا ہے یہ دل میرا زلفِ یار میں
Poet: عبدالرحمٰن ہاشمی
By: Abdul Rahman Hashmi, Sargodha

لگتا نہیں جی میرا اس سنسار میں
اٹکا ہے یہ دل میرا زلفِ یار میں

پھرتے ہیں مارے مارے ہم صحرا میں کیوں
نادان ہیں ہم عشق کے بازار میں

ساقی نہ روکو ہاتھ مے کے جام سے
باقی ہے جاں اِس عشق کے بیمار میں

Rate it: Views: 7 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 08 Jan, 2018
About the Author: Abdul Rahman Hashmi


افکار ہے میرا- عالم سے مفقود
کہتے ہیں یہ دیوانہ دیوانے ہیں
.. View More

Visit 70 Other Poetries by Abdul Rahman Hashmi »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.