رہ رہ کے اڑنے والی آنچل سنبھال لائی
Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

رہ رہ کے اڑنے والی آنچل سنبھال لائی
​آنچل سنبھالنے میں یوں بل سے کھا ہی آئی

یہ وہ ادا ہے جس کا کچھ نام ہی نہیں ہے​
​سننا تھا یہ کہ ظالم اِس طرح مسکرائی

یوں چپ ہے، مجھ سے گویا کچھ کام ہی نہیں ہے​
فریاد کی نظر نے، ارماں نے دی دُہائی​

اتنے میں رفتہ رفتہ چھانے لگا اندھیرا​
​چمکا دیا حیا نے ہر نقشِ دلبر ا پائی

​سُن کر مری مچلتی آنکھوں کی داستانیں​
اُس کی نگاہ میں بھی غلطاں ہوئی لبائی

​اس سادگی کے آگے نکلیں دلوں سے آہیں
ہونے لگی روانہ، ارماں نے سر جھکائی

پیوستہ ہے تجھی سے ہر آسِ میری وشمہ
تیری طرف ہی دل سے ہر اک دعا ئی

Rate it: Views: 1 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 11 Mar, 2018
About the Author: washma khan washma

I am honest loyal.. View More

Visit 4379 Other Poetries by washma khan washma »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.