ہے فاصلہ ہی فاصلہ کون و مکاں کےساتھ

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

کیا ڈھونڈتا ہے تُو بھی زمیں ، آسماں کےساتھ
ہے فاصلہ ہی فاصلہ کون و مکاں کےساتھ

خوشیوں سے دور درد میں گزری ہے زندگی
کچھ بھی نہیں ہے اپنی تو اس داستاں کےساتھ

جن کو تھا شوق بہہ کے کنارے سے جا لگیں
دریا میں ہیں وہ آج بھی آبِ رواں کےساتھ

لگتا ہے اب تو قوم کا رہبر بنے گا وہ
جس کو ملے گی زندگی اس کارواں کےساتھ

میرے ہر ایک شعر میں ہے تذکرہ یہی
عمرِ رواں کٹی مری سود و زیاں کےساتھ

اب آئینے کے روبرو چہرہ میں کیا کروں
جب زندگی کی دھول ہو اجڑے سماں کےساتھ

آنکھوں سے اپنے پیار کو کر لیں شکار ہم
اب بھی تو ایک تیر ہے وشمہ کماں کےساتھ

Rate it:
02 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4523 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City