اس یقین سے تو غموں کو دے بھلا
Poet: Maria Rehmani
By: Maria Rehmani, Kharian

اس یقین سے تو غموں کو دے بھلا
کہ امید کی ابھی باقی ہے گھٹا

میرے بجھے ہوّے تاریک لہجے سے پریشان نہ ہو
نہیں ہوں تجھ سے ہو ں میں خود سے خفا

دعاٰیٰں دیتے ہیں رات کو صحرا بھی
اے برستی ہویّ شبنم تیرا ہو بھلا

شمع تھی ،میں چراغ تھی زندگی کا
زندگی۔۔ تیرے کج ادایّیوں نے مجھے دیا گنوا
 

Rate it: Views: 9 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 08 Oct, 2018
About the Author: maria rehmani

Maria Rehmani from Kharian.. View More

Visit 32 Other Poetries by maria rehmani »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.