چاہت

Poet: Syed Zulfiqar Haider: 00923434887086
By: Syed Zulfiqar Haider, Gujranwala

نزدیکی کے باوجود دوری بڑھاۓ ہیں
میں کیسے مان لوں دل میں چاہت چھپاۓ ہیں
بے رُخی جبین پر سجاۓ مجھ سے ملتے ہیں
میں کیسے مان لوں دل میں چاہت چھپاۓ ہیں

میرے سامنے آ کر بِن کچھ کہے چلے جاتے ہیں
شمع کو بجھا کر پروانے کو ستاتے ہیں
سزاۓ محبت میں مجھے اس طرح جلاتے ہیں
میں کیسے مان لوں دل میں چاہت چھپاۓ ہیں

درمیان کھڑی کر دی ہے دیوار جُدائی کی
فاصلے بڑھا دیے ہیں اپنے میرے ساتھ میں
چلتے ہیں ہم بیگانی راہوں میں اکیلے
میں کیسے مان لوں دل میں چاہت چھپاۓ ہیں

زخم دیتے ہیں ایسے کہ بھرتے ہی نہیں
میرے درد کا بھی اُن کو احساس ہی نہیں
میرے خونِ جگر کو بہاتے ہیں دل تڑپاتے ہیں
میں کیسے مان لوں دل میں چاہت چھپاۓ ہیں
 

Rate it:
10 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Syed Zulfiqar Haider
Visit 50 Other Poetries by Syed Zulfiqar Haider »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

baat to sahi ha

By: Alishba, Gujrat on Oct, 20 2018

too good

By: Saira Khan, Gujranwala on Oct, 17 2018

awesome

By: Buland Iqbal, Phalia on Oct, 17 2018

bout khob

By: Raheel Butt, Okara on Oct, 14 2018

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City