اپنے پیروں پہ وار کرتے ہیں

Poet:
By: Shahid Hasrat, Multan

اپنے پیروں پہ وار کرتے ہیں
جو ترا اعتبار کرتے ہیں

ہم وہ گل ہیں جو پیڑ سے گر کے
آرزوئے بہار کرتے ہیں

کام آیا نہ کوئی مشکل میں
ہم جنهیں یار یار کرتے ہیں

میں ہوں خود زندگی سے شرمندہ
آپ کیوں شرمسار کرتے ہیں

حوصلے میرے آزمانے کو
وہ ستم بار بار کرتے ہیں

شعر پر واہ واہ ہوتی ہے
جب بهی ہم زکر_یار کرتے ہیں

جن کے ایماں حسرت! سچے ہوں
وہ ہی منزل کو پار کرتے ہیں

Rate it:
17 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Shahid Hasrat
Visit 264 Other Poetries by Shahid Hasrat »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City