ابھی زمانے کا معیار ہے تمہارے کیا

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

کسے بتاؤں کہ غم ہے کیا اتارے کیا
ابھی زمانے کا معیار ہے تمہارے کیا

قدم قدم پہ میں سنبھلی ہوں ٹھوکریں کھا کر
یہ ٹھوکروں نے بتایا ہمیں ہمارے کیا

زمیں پہ لالہ و گل آسماں پہ ماہ و نجوم
نگاہ حسن طلب کے جو بھی اشارے کیا

کمند ڈال رہا ہے جو چاند تاروں پر
خدا ہی جانے کہ تقدیر میں تمہارے کیا

نفس کی آمد و شد پر بھی اختیار نہیں
نکل گئے ہیں وہ میداں ہمارےسارے کیا

وفا پرستوں سے کیوں ضد ہے اس پہ سب چپ ہیں
سوال یہ ہے کہ اس کا جو بھی پکارے کیا

وشمہ جی تیرگیٔ شب کا احترام کرو
یہ ہو گیا ہے خدا جانے دل کنارے کیا

Rate it:
20 Oct, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4523 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City