دل بے چارہ پریشان رہا ہمیشہ

Poet: Sobiya Anmol
By: sobiya Anmol, Lahore

دل بے چارہ پریشان رہا ہمیشہ
آج ہی کا مہمان رہا ہمیشہ

لاکھوں آ رزوئیں رکھ کے بھی
بالکل بے سروسامان رہا ہمیشہ

گُل بُوٹے کِھلا کِھلا کے بھی
ہر وقت ویران رہا ہمیشہ

ہم جہاں جہاں سے بھی گزرے
سامنے اِک امتحان رہا ہمیشہ

گھٹاؤں میں گِھرے ہیں ہم
منہ زور طوفان رہا ہمیشہ

زخم بھر بھی گئے اگر
زخموں کا نشان رہا ہمیشہ

چاہت نہ ملی کبھی ہمیں
چاہت کا ارمان رہا ہمیشہ

مستقبل میں آ کے بھی سدا
ماضی پہ دھیان رہا ہمیشہ

جی جی کے مرتا ہی رہا یہ
سینہ میرا بے جان رہا ہمیشہ

Rate it:
28 Oct, 2018

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: sobiya Anmol
what can I say,people can tell about me... View More
Visit 128 Other Poetries by sobiya Anmol »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City