لوگ کیسے دل لگا لیتے ہیں

Poet: Sobiya Anmol
By: Sobiya Anmol, Lahore

لوگ کیسے دل لگا لیتے ہیں
دل میں تمنا جگا لیتے ہیں

ہمیں تو معلوم نہیں پڑتا
کیسے دنیا بھلا لیتے ہیں

سبھی رشتے ناطے بھول کے
نئی دنیا بسا لیتے ہیں

محبت کے انمول جواہرات
بے وفاؤں پہ لٹا دیتے ہیں

راہ چلتے قربان ہو جاتے ہیں
اجنبی سے ہاتھ ملا لیتے ہیں

باتوں میں آ جاتے ہیں
آسِ وفا بڑھا لیتے ہیں

کسی پہ یوں مر جاتے ہیں
اُسے آنکھوں میں چھپا لیتے ہیں

بے خود اپنی ذات سے ہو کر
اُسے خود میں سما لیتے ہیں

بدلا دیتے ہیں خود کو ایسے
کہ خود ہی سے بدلہ لیتے ہیں

Rate it:
11 Nov, 2018

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: sobiya Anmol
what can I say,people can tell about me... View More
Visit 128 Other Poetries by sobiya Anmol »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City