آپ ﷺکے دم سے خودی کا طاقچہ روشن ہوا

Poet: م الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi (Arshi), Karachi

آپ ﷺکے دم سے خودی کا طاقچہ روشن ہوا
معرفت کا رب سے ایسا سلسلہ روشن ہوا

جہل کا اک دور تھا اور لوگ غافل تھے سبھی
آپ ﷺ آئے حق کا ایسا راستہ روشن ہوا

کعبہ میں جو بت تھے سب وہ منہ کے بل گر پڑے
دنیا کے گرد ایسا پھر اک دائرہ روشن ہوا

آگ فارس میں لگی تھی برسوں سے وہ بجھ گئی
آپ ﷺ کی آمد ہوئی ایسا ضیا روشن ہوا

سارے عالم میں پرستش کا عجب تھا سلسلہ
آپﷺسے جینے کا پھر اک ضابطہ روشن ہوا

جھومتی گاتی فضا ہے اور دیتی ہے صدا
نور کا اک سلسلہ اب جا بجا روشن ہوا

ہے منور آج بھی انﷺ کے ہی دم سے یہ جہاں
آج بھی عاشق کا ہر گھر با خدا روشن ہوا
 

Rate it:
22 Nov, 2018

More Religious Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muhammad Arshad Qureshi
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
Visit 180 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City